NohayOnline

Providing writeups (english & urdu) of urdu nohay, new & old


Marhaba auno

Nohakhan: Aqueel & Rehan Abbas
Shayar: Ahmed


marhaba aun o mohamed

jafar ke tum ho potay tum faqre murtaza ho
azm o bahaduri may tum misle ba-wafa ho
dushmano ka naksha badaldo
karbala may zulmat mita do
lab pe sarwar ke ye sada ho
marhaba aun o mohamed...

khyber ki tarha koofe ke dar ko tum ukhado
shimr e layeen ko maaro aur shaam ko tum lelo
naizon pe apne seene ko raylo
misle khyber ki jang jhelo
arsh se fatema ki dua ho
marhaba aun o mohamed...

taygh o tabar to todo darya pe karlo qabza
pani jo peeliya to bakshun na sheer apna
maa ki ismat ki laaj rakhlo
maut ke jaam ko has ke peelo
deen e ahmed ki par baqa ho
marhaba aun o mohamed...

baba ki tarha humle zaalim pe karo sheron
talwaro pe tan tan ke aage bado dileron
deene ahmed pe jaan luta do
dushmane sheh ke sar ko udha do
is ghadi dil se meri sada ho
marhaba aun o mohamed...

ahmed aqeel o rehan noha jo sunate hai
zehra ki hi chaukat se tauqeer wo paate hai
ghame shabbir may khoob rolo
sheh ke matam may khoon baha lo
par hussain ki bas ye baqa ho
marhaba aun o mohamed...

مرحبا عون و محمد

جعفر کے تم ہو پوتے تم فخر مرتظی ہو
عظم و بہادری میں تم مثل باوفا ہو
دشمنوں کا نقشہ بدل ڈالو
کربلا میں ظلمت مٹا دو
لب پہ سرور کے یہ صدا ہو
مرحبا عون و محمد۔۔۔

خیبر کی طرح کوفے کے در کو تم اکھاڑو
شمر لعیں کو مارو اور شام کو تم لے لو
نیزوں پہ اپنے سینے کو ریلو
مثل خیبر کی جنگ جھیلو
عرش سے فاطمہ کی دعا ہو
مرحبا عون و محمد۔۔۔

تیغ و تبر تو توڑو دریا پہ کرلو قبضہ
پانی جو پی لیا تو بخشوں نہ شیر اپنا
ماں کی عصمت کی لاج رکھلو
موت کے جام کو ہنس کے پی لو
دین احمد کی پر بقا ہو
مرحبا عون و محمد۔۔۔

بابا کی طرح حملے ظالم پہ کرو شیروں
تلواروں پہ تن تن کے آگے بڑھو دلیروں
دین احمد پہ جاں لٹا دو
دشمن شہ کے سر کو اڑھا دو
اس گھڑی دل سے میری صدا ہو
مرحبا عون و محمد۔۔۔

احمد عقیل و ریحان نوحہ جو سناتے ہیں
زہرا کی ہی چوکھٹ سے توقیر وہ پاتے ہیں
غم شبیر میں خوب رولو
شہ کے ماتم‌ میں خوں بہا لو
پر حسین کی بس یہ بقا ہو
مرحبا عون و محمد۔۔۔