NohayOnline

Providing writeups (english & urdu) of urdu nohay, new & old


Aap jab se huwe

Nohakhan: Mir Rehan Abbas
Shayar: Najam Azmi


ya rasool allah
apni tanhaai may zehra yaad karti hai tumhe

aap jab se huwe juda baba
fatema ka hai bus khuda baba

pehle amma ko khoya ab tumko
paas zahra ke kya bacha baba
aap jab se huwe juda...

aap ke baad guzre din aise
fatema aur nahi jafa baba
aap jab se huwe juda...

lakdiyan aag le ke aaya koi
aur jalaya tha dar mera baba
aap jab se huwe juda...

waasta aap ka diya maine
phir bhi zaalim nahi ruka baba
aap jab se huwe juda...

aap ke gham may rona chaaha agar
mujhko rone nahi diya baba
aap jab se huwe juda...

har masayab ki inteha hai yehi
mera mohsin nahi raha baba
aap jab se huwe juda...

baad e mohsin samajh gayi hoo mai
karbala ki hai ibteda baba
aap jab se huwe juda...

nafs apna kaha jise tumne
uski khaatir kare dua baba
aap jab se huwe juda...

ab to milta nahi jawabe salaam
haal e hyder hai is tarha baba
aap jab se huwe juda...

naam lewa sahabiyo ne tere
haq bhi cheena yateem ka baba
aap jab se huwe juda...

najm o rehan par bhi kar do karam
hai ye zahra ki ilteja baba
aap jab se huwe juda...

یا رسول اللّٰہ
اپنی تنہائی میں زہرا یاد کرتی ہے تمہیں

آپ جب سے ہوے جدا بابا
فاطمہ کا ہے بس خدا بابا

پہلے اماں کو کھویا اب تم کو
پاس زہرا کے کیا بچا بابا
آپ جب سے ہوے جدا۔۔۔

آپ کے بعد گزرے دن ایسے
فاطمہ اور نیء جفا بابا
آپ جب سے ہوے جدا۔۔۔

لکڑیاں آگ لے کے آیا کوئی
اور جلایا تھا در میرا بابا
آپ جب سے ہوے جدا۔۔۔

واسطہ آپ کا دیا میں نے
پھر بھی ظالم نہیں رکا بابا
آپ جب سے ہوے جدا۔۔۔

آپ کے غم میں رونا چاہا اگر
مجھکو رونے نہیں دیا بابا
آپ جب سے ہوے جدا۔۔۔

ہر مصائب کی انتہا ہے یہی
میرا محسن نہیں رہا بابا
آپ جب سے ہوے جدا۔۔۔

بعد محسن سمجھ گیء ہوں میں
کربلا کی ہے ابتداء بابا
آپ جب سے ہوے جدا۔۔۔

نفس اپنا کہا جسے تم‌ نے
اسکی خاطر کرے دعا بابا
آپ جب سے ہوے جدا۔۔۔

اب تو ملتا نہیں جواب سلام
حال حیدر ہے اس طرح بابا
آپ جب سے ہوے جدا۔۔۔

نام لیوا صحابیوں نے تیرے
حق بھی چھینا یتیم کا بابا
آپ جب سے ہوے جدا۔۔۔

نجم و ریحان پر بھی کر دو کرم
ہے یہ زہرا کی التجاء بابا
آپ جب سے ہوے جدا۔۔۔