NohayOnline

Providing writeups (english & urdu) of urdu nohay, new & old


Darbari baithe hai

Nohakhan: Kazmi Brothers
Shayar: Ahsan Mujtaba


jisne sada se pehle hamesha ata kiya
beti usi ki ban ke sawali khadi rahi

jo samjhe musalaman musibat yehi hai
ke darbari baithe hai zahra khadi hai

sitam hai muhammad ki thereer padh kar
sabhi has rahe hai wohi ro rahi hai
ke darbari baithe hai...

hijab e khuda hai jo binte nabi hai
wo darbar may jaane kabse khadi hai
ke darbari baithe hai...

diya aise ummat ne baba ka pursa
batool apne pehlu ke bal gir padi hai
ke darbari baithe hai...

bata mujhko amma mera jurm kya tha
ye mohsin ki ab bhi sada aa rahi hai
ke darbari baithe hai...

karegi na zahra ab apna koi gham
ali ke galay may rasan dekhti hai
ke darbari baithe hai...

khayaal aa gaya berida betiyon ka
wo ghazi ka kurta jabhi see rahi hai
ke darbari baithe hai...

hai mushkil bada qabre zahra banana
ali ke labon pe bhi nade ali hai
ke darbari baithe hai...

batool ab bhi qabre shikasta se ahsan
imam e zaman ko sada de rahi hai
ke darbari baithe hai...

جس نے صدا سے پہلے ہمیشہ عطا کیا
بیٹی اسی کی بن میں کے سوالی کھڑی رہی

جو سمجھے مسلمان مصیبت یہی ہے
کہ درباری بیٹھے ہیں زہرا کھڑی رہی

ستم ہے محمد کی تحریر پڑھ کر
سبھی ہنس رہے ہیں وہی رو رہی ہے
کہ درباری بیٹھے ہیں۔۔۔

حجاب خدا ہے جو بنت نبی ہے
وہ دربار میں جانے کب سے کھڑی ہے
کہ درباری بیٹھے ہیں۔۔۔

دیا ایسے امت نے بابا کا پرسہ
بتول اپنے پہلو کے بل گر پڑی ہے
کہ درباری بیٹھے ہیں۔۔۔

بتا مجھکو اماں میرا جرم کیا تھا
یہ محسن کی اب بھی صدا آ رہی ہے
کہ درباری بیٹھے ہیں۔۔۔

کرے گی نہ زہرا اب اپنا کوئی غم
علی کے گلے میں رسن دیکھتی ہے
کہ درباری بیٹھے ہیں۔۔۔

خیال آ گیا بے ردا بیٹیوں
وہ غازی کا کرتہ جبھی سی رہی ہے
کہ درباری بیٹھے ہیں۔۔۔

ہے مشکل بڑا قبر زہرا بنانا
علی کے لبوں پہ بھی ناد علی ہے
کہ درباری بیٹھے ہیں۔۔۔

بتول اب بھی قبر شکستہ سے احسان
امام زمن کو صدا دے رہی ہے
کہ درباری بیٹھے ہیں۔۔۔