NohayOnline

Providing writeups (english & urdu) of urdu nohay, new & old


Tashnalab mazloom

Reciter: Zeya Jalalpuri
Shayar: Baquer Amanathkhani


tashnalab mazloom sarwar alvida
fatima zehra ke dilbar alvida

shaan e majlis tha tumhara zikre gham
raunaq e mehrab o mimbar alvida
tashnalab mazloom...

hai jawani bhi wa-baale zindagi
ab tumhare gham may akbar alvida
tashnalab mazloom...

lijiye aun o mohamed ab salaam
saabira zainab ke dilbar alvida
tashnalab mazloom...

dil se ab nakshe wafa mit'ta nahi
jao abbas e dilawar alvida
tashnalab mazloom...

majlison may hum ko rota chod kar
muskurate jao asghar alvida
tashnalab mazloom...

ab na zainab jaogi tum sar khule
nazr hai ashkon ki chadar alvida
tashnalab mazloom...

rote hai baqir muhibbane hussain
kehte hai sibte payambar alvida
tashnalab mazloom...

تشنہ لب مظلوم سرور الوداع
فاطمہ زہرا کے دلبر الوداع

شان مجلس تھا تمہارا ذکرِ غم
رونقِ محراب و ممبر الوداع
تشنہ لب مظلوم۔۔۔

ہے جوانی بھی وا بالے زندگی
اب تمہارے غم میں اکبر الوداع
تشنہ لب مظلوم۔۔۔

لیجئے عون و محمد اب سلام
صابرہ زینب کے دلبر الوداع
تشنہ لب مظلوم۔۔۔

دل سے اب نقش وفا مٹتا نہیں
جاؤ عباس دلاور الوداع
تشنہ لب مظلوم۔۔۔

مجلسوں میں ہم کو روتا چھوڑ کر
مسکراتے جاؤ اصغر الوداع
تشنہ لب مظلوم۔۔۔

اب نہ زینب جاؤ گی تم سر کھلے
نظر ہے اشکوں کی چادر الوداع
تشنہ لب مظلوم۔۔۔

روتے ہیں باقر محبان حسین
کہتے ہیں سبط پیمبر الوداع
تشنہ لب مظلوم۔۔۔