NohayOnline

Providing writeups (english & urdu) of urdu nohay, new & old


Ay sher tu na jaa

Nohakhan: Kazmi Brothers
Shayar: Ahmed Naved


ay alamdare wafa
saqqa e haram behno ka bharam
hai tere hone se bhaiya
sunle ghazi zainab ki sada

abbas tere haath mere sar ki hai rida
ay sher tu na jaa
ye haath kat gaye to karungi rida ka kya
ay sher tu na jaa

kaun aayega bachane ko teeron se bhai ko
khanjar chalega jab to kise doongi mai sada
ay sher tu na jaa
abbas tere haath mere...

naiza har ek ke haath may hoga ba waqt e shaam
kis kis se apne sar ki bachaungi mai rida
ay sher tu na jaa
abbas tere haath mere...

us waqt kya karungi jab pyasi sakina ko
pani dikha dikha ke bahayenge ashkiyan
ay sher tu na jaa
abbas tere haath mere...

bhai hai tu kisi ka alam aur kisi ki aas
bhai hai mere waaste tu saaya e khuda
ay sher tu na jaa
abbas tere haath mere...

bhai ye tere haath haram ka hai sayeban
parde ki ibteda hai ye parde ki inteha
ay sher tu na jaa
abbas tere haath mere...

aayega khoon may dooba hua jab alam naved
qaime ke dar pe goonj rahi hogi ye sada
ay sher tu na jaa
abbas tere haath mere...

اے علمدار وفا
سقاے حرم بہنوں کا بھرم
ہے تیرے ہونے سے بھیا
سن لے غازی زینب کی صدا

عباس تیرے ہاتھ میرے سر کی ہے ردا
اے شیر تو نہ جا
یہ ہاتھ کٹ گےء تو کرونگی ردا کا کیا
اے شیر تو نہ جا

کون آے گا بچانے کو تیروں سے بھای کو
خنجر چلے گا جب تو کسے دونگی میں صدا
اے شیر تو نہ جا
عباس تیرے ہاتھ میرے۔۔۔

نیزہ ہر ایک کے ہاتھ میں ہوگا بہ وقت شام
کس کس سے اپنے سر کی بچاؤں گی میں ردا
اے شیر تو نہ جا
عباس تیرے ہاتھ میرے۔۔۔

اس وقت کیا کروں گی جب پیاسی سکینہ کو
پانی دکھا دکھا کے بہاےنگے اشقیا
اے شیر تو نہ جا
عباس تیرے ہاتھ میرے۔۔۔

بھای ہے تو کسی کا الم اور کسی کی آس
بھای ہے میرے واسطے تو سایۂ خدا
اے شیر تو نہ جا
عباس تیرے ہاتھ میرے۔۔۔

بھای یہ تیرے ہاتھ حرم کا ہے سایباں
پردے کی ابتدا ہے یہ پردے کی انتہا
اے شیر تو نہ جا
عباس تیرے ہاتھ میرے۔۔۔

آے گا خوں میں ڈوبا ہوا جب الم نوید
خیمے کے در پہ گونج رہی ہوگی یہ صدا
اے شیر تو نہ جا
عباس تیرے ہاتھ میرے۔۔۔